۔شاہین پبلک سکول کی ٹیچر والدین کے لاکھوں روپے لیکر فرار۔سکول انتظامیہ کا میڈیا میں بات کرنے پر بچوں کو سکول سے اٹھا دینے کی دھمکی۔

کلرسیداں(مرزاعتیق الرحمن)۔شاہین پبلک سکول کی ٹیچر والدین کے لاکھوں روپے لیکر فرار۔سکول انتظامیہ کا میڈیا میں بات کرنے پر بچوں کو سکول سے اٹھا دینے کی دھمکی۔کلرسیداں کے شاہین پبلک سکول کی ٹیچر نگہت الیاس نے داخلے کے لئیے آنے والے والدین سے بطور ادھار لاکھوں روپے لئیے اور سکول چھوڑ کر چلی گئ۔ٹیچر نگہت الیاس نے نئے داخل ہونے والوں بچوں کے سامنے اپنی گھریلو پریشانیوں کو بیان کرتے ہوئے کسی سے 20 ہزار تو کسی سے 30ہزار روپے بطور ادھار۔اور ایڈوانس فیس اور داخلہ فیس کی مد میں رقم لی کہ آپکی رقم اگلے چندہ ماہ کی فیس میں ایڈجسٹ کر دوں گی۔اور بطور ضمانت رسیدیں اور چیک دئیے۔اور لاکھوں روپے لیکر سکول چھوڑ کر فرار۔کرونا وائرس کے بعد جب سکول کھلے تو سکول انتظامیہ نے بچوں کو واپس بھیج دیا کہ آپکا ایڈمشن ہی نہیں ہوا اور والدین نے سکول انتظامیہ کو بتایا کہ ہم۔نے داخلہ فیس اور ایڈوانس فیس مس نگہت الیاس کو ادا کی ہوئی ہے۔جس پر سکول انتظامیہ نے کہنا ہے کہ رقم سکول اکاونٹ میں بھی جمع نہیں کرائی گئ۔زرائع کے مطابق اس ساری گیم میں سکول انتظامیہ بھی ملوث ہے۔والدین نے جب سکول انتظامیہ سے اس سلسلے میں رابطہ کیا تو انتظامیہ کا کہنا ہے کہ وہ انکا ذاتی لین دین ہے اور اگر آپ نے بات میڈیا تک پہنچائی تو سکول انتظامیہ بچوں کو سکول سے فارغ کر دے گی۔دوسری طرف والدین کا کہنا ہے کہ ہم نے تو رقم شاہین سکول کے نام پر دی ہیں۔انتظامیہ ہماری رقم واپس نہ کروائی گئ تو ہم سکول انتظامیہ کے خلاف قانونی کارروائی کریں گئے

اپنا تبصرہ بھیجیں